Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Afsos Saad Afsos | افسوس صد افسوس

( 6 Votes )

Afsos saad afsos ghanaonay juram kernay walon per
Khulay phirty hain unhain koi pochnay wala nahi

Akhrat ka dar nahi dheeli rasi daraz hai unki
Jan jin ki khatron mein hai unko koi pochnay wala nahi

Pary hain har gali koochay mein hazaron lakhon mein
Bhookon, tang-daston, lawarison ko koi pochnay wala nahi

Aaj har taraf nafsa nafsi ka dor hai magar
Sadmon, takleef, museebaton mein koi pochnay wala nahi

Firaouniat ke takazay bhi kuch hoty hon gaye
Zilaton, azeeton, jaan sozion mein koi pochnay wala nahi

Ibn-e-Maryam hi har dukh dard ki dawa hai sun lo
Uske siva zakhmon peh koi marham rakhnay wala nahi

افسوس صد افسوس گھنائونے جُرم کرنے والوں پر
کھُلے پھرتے ہیں انہیں کوئی پوچھنے والا نہیں

آخرت کا ڈر نہیں ڈھیلی رسی دراز ہے اُنکی
جان جن کی خطروں میں ہے اُنکو کوئی پوچھنے والا نہیں

پٹرے ہیں ہر گلی کُوچے میں ہزاروں لاکھوں میں
بھُوکوں، تنگدستوں، لاوارثوں کو کوئی پوچھنے والا نہیں

آج ہر طرف نفسا نفسی کا دور ہے مگر
صدموں، تکلیفوں، مصیبتوں میں کوئی پوچھنے والا نہیں

فرعونیت کے تقاضے بھی کچھ ہوتے ہوں گے
ذِلتوں، اذیتوں، جاں سوزیوں میں کوئی پوچھنے والا نہیں

ابنِ مریم ہی ہر دُکھ درد کی دوا ہے سُن لو
اُسکے سِوا زخموں پے کوئی مرہم رکھنے والا نہیں

© Samson Tariq 2010

Add comment


Security code
Refresh

Login Form