Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Har Shaks Qaid Hi | ہر شخص قید ہے

( 1 Vote )

Har shaks qaid apni hi par chaiyon mein hai
Dekho jisay bhi aj wohi waswason mein hai

Ek umar ho chali hai dua mangtay huay
Ab tak magar hayat barhi mushkil mein hai

Jin bastiyon mein rehty hain sadah mizaaj log
Tanweer zindagi ki unhi bastiyon mein hai

Mana keh ek azaab tamazat hai dhoop ki
Khadshah bhi habs-e-jaan ka mujhe barishon mein hai

Jin ansuon peh jabar ki pabandiyan rahein
Taseer-e-inqalab unhi ansuon mein hai

Tehsheer-e-fan se is liye karta hon mein guraiz
Gumnamiyon ka khof bhi to shohraton mein hai

Kehti hain saf saf yeh ankhein thaki hui
Mashghol mudaton se Amar rat jagon mein hai

ہر شخص قید اپنی ہی پر چھائیوں میں ہے
دیکھو جسے بھی آج وہی وسوسوں میں ہے

اِک عمر ہو چلی ہے دُعا مانگتے ہوئے
اب تک مگر حیات بڑی مشکلوں میں ہے

جن بستیوں میں رہتے ہیں سادہ مزاج لوگ
تنویر زندگی کی انہی بستیوں میں ہے

مانا کہ اک عذاب تمازت ہے دھوپ کی
خدشہ بھی حبسِ جاں کا مجھے بارشوں میں ہے

جن آنسووں پہ جبر کی پابندیاں رہیں
تاثیرِ انقلاب انہی آنسووں میں ہے

تشہیرِ فن سے اس لئے کرتا ہوں میں گریز
گمنامیوں کا خوف بھی تو شہرتوں میں ہے

کہتی ہیں صاف صاف یہ آنکھیں تھکی ہوئی
مشغول مدتوں سے امر رت جگوں میں ہے

© 2010 Pervez Amar

Login Form