Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Naya Insan | نیا انسان

( 1 Vote )

Jo Nasiri ko dil mein utaray chalay gaye
Woh admiyat apni sudharay chalay gaye

Suntay hi nam Nasiri ka shad hogaye
Jin gham zadon ke saharay chalay gaye

Phir se huay jo peda yahan ab-e-roh se
Yesu ki badshahat mein saray chalay gaye

Be khof par hogaye wadi se moat ki
Jo nasiri ka nam pukaray chalay gaye

Barray ka khoon chashma-e-akseer ban gaya
Pehlu se uskay behtay jo dharay chalay gaye

Ek aap hi Masih zindah kabar se niklay
BAki to sab moat ke haray chalay gaye

Tera gunah ka bojh halka ho Khayal
Halat tere shafi sunwaray chalay gaye

جو ناصری کو دل میں اُتارے چلے گئیے
وہ آدمیت اپنی سُدھارے چلے گئے

سُنتے ہی نام ناصری کا شاد ہوگئے
جن غم زدوں کے سارے سہارے چلے گئے

پھر سے ہُوئے جو پیدا یہاں آب و روح سے
یسوع کی بادشاہت میں سارے چلے گئے

بے خوف پار ہوگئے وادی سے موت کی
جو ناصری کا نام پُکارے چلے گئے

برّے کا خون چشمہ اَکسیر بن گیا
پہلُو سے اسکے بہتے جو دھارے چلے گئے

اِک آپ ہی مسیحا زندہ قبر سے نکلے
باقی تو سارے موت کے ہارے چلے گئے

تیرے گُناہ کا بوچھ ہلکا ہُوا خیالؔ
حالات تیرے شافی سنوارے چلے گئے

© 2003 Khayal Hoshiarpuri

Add comment


Security code
Refresh

Login Form