Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Nasiri Ka Pyar | ناصری کا پیار

( 3 Votes )

Jab se Masih-e-Pak ke dedar ho gaye
Faiz-o-karam ke jam se sarshar ho gaye

Un ke karam ka dil mera mashkoor kyoun na ho
Mere saza woh panay ko tayar hogaye

Kyoun moat ka bhala rahay khof-o-khatar humein
Ab to Masiha asiyon ke yaar hogaye

Tobah ne jin gunhaon ko aksar mita diya
Hum se wohi gunah kayi bar hogaye

Bhat-ti mein jab giraye gaye teen nojawan
Ibn-e-Khuda ke aag mein dedar ho gaye

Mansookh mere hogi jurmon ki dastawez
Masloob khud mere liye sarkar hogaye

Tarikiyan Khayal mere rah se hat gayein
Yeh mere dil mein kon zayabar ho gaye

جب سے مسیح پاک کے دیدار ہوگئے
فیض و کرم کے جام سے سرشار ہوگئے

اُن کے کرم کا دِل مرا مشکُور کیوں نہ ہو
میری سزا وہ پانے کو تیار ہوگئے

کیوں موت کا بھلا رہے خوف و خطر ہمیں
اب تو مسیحا عاصیوں کے یار ہوگئے

توبہ نے جن گُناہوں کو اکثر مِٹا دیا
ہم سے وُہی گناہ کئی بار ہوگئے

بھٹی میں جب گرائے گئے تین نوجواں
ابنِ خُدا کے آگ میں دیدار ہوگئے

منسُوخ میری ہوگئی جُرموں کی دستاویز
مصلُوب خود مرے لیے سرکار ہوگئے

تاریکیاں خیالؔ میری راہ سے ہٹ گئیں
یہ میرے دِل میں کون ضیابار ہوگیے

© 2003 Khayal Hoshiarpuri

Add comment


Security code
Refresh

Login Form