Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Eid-E-Qayamat | عید ِ قیامت

( 1 Vote )

Ibn-e-Khuda ne kholi rah-e-baka hi aj
Mar key humari khatir woh je utha hi aj

Saray Jerusalem mein tehalka macha hi aj
Murdah jo teen din ka tha kesay jiya hi aj

Dil mein humaray ab koi khof-e-ajal nahi
Detay hayat-e-daimi woh agaya hi aj

Fidya diya hi khoon se humara saleeb per
Rehmat ka us ki har taraf charcha hua hi aj

Maskan milay ga hum ko tayar asman per
Yeh intezam usi ne to pora kia hi aj

Bethanya mein ja ke yeh Lazur ko do khabar
Murday jaganay wala bhi khud je utha hi aj

Har dil mein shadmani hi har ghar mein roshni
Kehty hain Magdelini ko woh mil gaya hi aj

Qayal bil-akhar hogaya woh romi soobedar
Yesu Khuda ka beta hi, woh keh utha hi aj

Sab ko kaho mubarik ho yeh Ester Khayal
Jo mar gaya tha woh zindah Masiha hua hi aj

ابنِ خُدا نے کھولی راہ ِ بقا ہے آج
مر کے ہماری خاطر وہ جی اُٹھا ہے آج

سارے یروشلیم میں تہلکہ مچا ہے آج
مُردہ جو تین دن کا تھا کیسے جیا ہے آج

دل میں ہمارے اب کوئی خوف ِ اجل نہیں
دیتے حیاتِ دائمی وہ آگیا ہے آج

فدیہ دیا ہے خون سے ہمارا صلیب پر
رحمت کا اس کی ہر طرف چرچا ہوا ہے آج

مسکن ملے گا ہم کو تیار آسماں پر
یہ انتظام اُسی نے تو پُورا کیا ہے آج

بیتھنیا میں جا کے یہ لعزر کو دو خبر
مُردے جگانے والا بھی خود جی اُٹھا ہے آج

ہر دل میں شادمانی ہے ہر گھر میں روشنی
کہتے ہیں مگدلینی کو وُہ مل گیا ہے آج

قائیل بلآخر ہوگیا وہ رُومی صُوبیدار
یسوع خُدا کا بیٹا ہے، وہ کہہ اُٹھا ہے آج

سب کو کہو مُبارک ہو یہ ایسٹر خیالؔ
جو مرگیا تھا زندہ مسیحا ہُوا ہے آج

© 2003 Khayal Hoshiarpuri

Comments  

 
0 #1 Philipnum 2017-04-07 00:51
http://stemmeries.xyz norsk kasino http://stemmeries.xyz - norsk kasino
Quote
 

Add comment


Security code
Refresh

Login Form