Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Abar-E-Rehmat | ابر ِ رحمت

( 2 Votes )

AGar ibn-e-Maryam sara nah hota
Gunahon ka mere kafarah na hota

Na hota kabhi par apna safeena
Agar ba khuda woh humara na hota

Gunahon ki zulmat na kafoor hoti
Agar Nasiri ashkara na hota

Masiha jo dunya mein aya na hota
Koi baykason ka shara na hota

MAjoosi hamesha bhatkay hi rehty
Agar rah numa woh sitara na hota

Mere dil ki basti pari rehti sooni
Woh shafi agar ashkara na hota

Na hoti jahan mein koi jaye sajdah
Agar Calvary ka nizara na hota

Bhala kesay mit-ta mera dagh-e-asiyan
Agar nezah pasli mein mara na hota

Agar uskay pehlu se behta na chashma
Mere dard ka koi charah na hota

Masiha ki qudrat kahan  hoti zahir
Jo murdon ko us ne pukara na hota

Na hota Masiha jo qudrat mein wahid
Humein sar jhukana gawara na hota

Sitifnas khushi se sangsar hota
Usay gar Yesu ka isharah na hota

Na aeina hota tera husan-e-mutliq
Agar hum ne dil mein tuara na hota

Khayal hum usay bhool ker bhi jo chootay
Masiha ka daman jo pyara na hota

اگر ابن ِ مریم سہارا نہ ہوتا
گناہوں کا میرے کفارہ نہ ہوتا

نہ ہوتا کبھی پار اپنا سفینہ
اگر با خُدا وہ ہمارا نہ ہوتا

گناہوں کی ظُلمت نہ کافور ہوتی
اگر ناصری آشکارا نہ ہوتا

مسیحا جو دنیا میں آیا نہ ہوتا
کوئی بےکسوں کا سہارا نہ ہوتا

مجُوسی ہمیشہ بھٹکتے ہی رہتے
اگر راہ نُما وہ ستارہ نہ ہوتا

مِرے دل کی بستی پٹری رہتی سُونی
وہ شافی اگر آشکارہ نہ ہوتا

نہ ہوتی جہاں میں کوئی جائے سجدہ
اگر کلوری کا نظارہ نہ ہوتا

بھلا کیسے مِٹتا مِرا داغ ِ عصیاں
اگر نیزہ پسلی میں مارا نہ ہوتا

اگر اُ سکے پہلُو سے بہتا نہ چشمہ
مرے درد کا کوئی چارہ نہ ہوتا

مسیحا کی قدرت کہاں ہوتی ظاہر
جو مُردوں کو اُس نے پُکارا نہ ہوتا

نہ ہوتا مسیحا جو قُدرت میں واحد
ہمین سر جھُکانا گوارا نہ ہوتا

سِتفنُس خوشی سے سنگسار ہوتا
اُسے گر یسوع کا اِشارہ نا ہوتا

نہ آئینہ ہوتا تِرا حُسن ِ مُطلق
اگر ہم نے دِل میں اُتارا نہ ہوتا

خیالؔ ہم اُسے بھُول کر بھی جو چھُوتے
مسیحا کا دامن جو پیارا نہ ہوتا

© 2003 Khayal Hoshiarpuri

Add comment


Security code
Refresh

Login Form