Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Chor Pardes Ab | چھوڑ پردیس اب

( 1 Vote )

Chor pardes ab tujhe des mein ana hoga
Na raha beta na betay ki tarah kehna hoga

Rakha nahi bhool ker tere mohabbat ka bharam
Bap ko man keh aaqa to phir ghar jana hoga

Haq to tera tha phir bap se manga kyoun tha?
Jis moun se khoya tha phir usi tarz se pana hoga

Dard ki chokhat per kyoun bezaar para hi?
Uth Masiha ki wirasat se tujhe pana hoga

Joseph ne to abtak kabhi socha bhi nahi tha
Apnay Khaliq ko mujhe Bap keh ker bulana hoga

چھوڑ پردیس اب تجھے دیس میں آنا ہوگا
نہ رہا بیٹا نہ بیٹھے کی طرح کہنا ہوگا

رکھا نہیں بھول کر تیری مُحبت کا بھرم
باپ کو مان کہ آقا تو پھر گھر جانا ہوگا

حق تو تیرا تھا پھر باپ سے مانگا کیوں تھا؟
جِس مُنہ سے کھویا تھا پھر اُسی ترز سے پانا ہوگا

درد کی چوکھٹ پر کیوں بیزار پٹرا ہے؟
اُٹھ مسیحا کی وراثت سے تجھے پانا ہوگا

جوزف نے تو ابتک کبھی سوچا بھی نہیں تھا
اپنے خالق کو مُجھے باپ کہہ کر بُلانا ہوگا


Add comment


Security code
Refresh

Login Form