Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Nojawanon Se Khitab | نوجوانوں سے خطاب

( 3 Votes )

Mere aziz-e-kom tu khud ko zra badal ker dekh
Apnay Masih ke sath sath thora sa aj chal ke dekh

Tu jo machalta hi raha aish-o-saroor mein sada
Yesu ko dil mein anay de, phir zra machal ke dekh

Rakha Masih ke sath bhi tark-e-gunah bhi na kia
Achi nahi yeh dozkhi, iblees ko kuchal ke dekh

Tere tamam khoobian tujh ko sakoon na de sakein
Sara gharoon-o-khudsari, rashk-o-hasad masal ke dekh

Jisko sirat-e-mustakim samjha hai woh sarab hi
Yesu hai rah-o-zindagi, khud ko zra sambhal ke dekh

Tu ne hamesha lamha bhar khushion ke dam de diye
Tujh ko milein gi rahatein khud se zra nikal ke dekh

Dil ki ujarh rah mein diye jala ke rakh diye
Tere shama jalaye ga sadkay tu ous fazal ke dekh

میرے عزیزِ قوم تو خود کو ذرا بدل کر دیکھ
اپنے مسیح کے ساتھ ساتھ تھوڑا سا آج چل کے دیکھ

تو جو مچلتا ہی رہا عیش و سرور میں سدا
یسوع کو دل میں آنے دے، پھر بھی ذرا مچل کے دیکھ

رکھا مسیح کو ساتھ بھی ترکِ گُناہ بھی نہ کیا
اچھی نہیں یہ دوزخی، اِبلیس کو کُچل کے دیکھ

تیری تمام خُوبیاں تجھ کو سکوں نہ دے سکیں
سارا غرور و خودسری، رشک و حسد مسل کے دیکھ

جسکو سراطِ مُستقیم سمجھا ہے وہ سراب ہے
یسوع ہے راہ و زندگی، خود کو ذرا سنبھل کے دیکھ

تو نے ہمیشہ لمحہ بھر خوشیوں کے دام دے دئیے
تجھ کو ملیں گی راحتیں خود سے ذرا نکل کے دیکھ

دل کی اُجاڑ راہ مین دئیے جلا کے رکھ دئیے
تیری شمع جلائے گا صدقے تو اُس فضل کے دیکھ

© Dr Munawar Dean

Login Form