Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Aj Weranay Ko Phir | آج ویرانے کہ پھر

( 3 Votes )

Aj weranay ko woh phir se sajanay k liye
Khud utar aya zameen per woh bachanay k liye

Dekhna chaho to jao dekh lo Bethlehem
Khoob charni hi saji dil ko lubhanay ke liye

Tergi ka farash se mit jaye ga tanah hamesh
Noor khuda hi agaya kirnein bichanay ke liye

Tafl-e-Nadaan aj tak madhosh hi sotay rahay
Woh zameen per agaya un ko jaganay ke liye

Kash ho naghma sera Kawish bhi Tere shehar mein
Gul khilein gulshan mein Tere mehak janay ke liye

آج ویرانے کو وہ پھر سے سجانے کے لئے
خود اُتر آیا زمیں پر وہ بچانے کے لئے

دیکھنا چاہو تو جاﺅ دیکھ لو بیت اللحم
خُوب چرنی ہے سجی دل کو لُبھانے کے لئے

تیرگی کا فرش سے مِٹ جائے گا طعنہ ہمیش
نُور خود ہے آگیا کرنیں بچھانے کے لئے

طفلِ ناداں آج تک مدہوش ہی سوتے رہے
وہ زمیں پر آگیا اُن کو جگانے کے لئے

کاش ہو نغمہ سرا کاوش بھی تیرے شہر میں
گُل کِھلیں گُلشن میں تیرے مہک جانے کے لئے

© 2010 Cecil Robert Timothy

Login Form