Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Ab Ehl-e-Kalesia Bhi | اَب اہلِ کلیساءبھی

( 2 Votes )

Ab ehl-e-kalesia bhi wafa bech rahay hain
Kehnay ko farishtay hein Khuda bech rahay hain

Do waqt ki roti ko tarsta hi jahan dil
Is shehar mein kuch log dua bech rahay hain

Thehro mein zara girjay ki kuch khak utha lon
Kal mere rahnuma yeh jagah bech rahay hain

Yeh zulam kay banni hain Naqeeb in ki no pocho
Yeh asmat-o-hurmat ki dawa bech rahay hain

اَب اہلِ کلیساءبھی وفا بیچ رہے ہیں
کہنے کو فرشتے ہیں خُدا بیچ رہے ہیں
....٭........٭....

دو وقت کی روٹی کو ترستا ہے جہاں دِل
اُس شہر میں کُچھ لوگ دُعا بیچ رہے ہیں
....٭........٭....

ٹھہرو میں ذرا گِرجے کی کُچھ خاک اُٹھا لوں
کل میرے رہنما یہ جگہ بیچ رہے ہیں
....٭........٭....

یہ ظُلم کے بانی ہیں نقیب اِن کی نہ پوچھو
یہ عصمت و حرمت کی دوا بیچ رہے ہیں

© 2010 Arif Pervez Naqeeb

Comments  

 
0 #1 Sailipnum 2017-05-22 22:13
http://undeclaiming.xyz norsk kasino http://undeclaiming.xyz - norsk kasino
Quote
 

Add comment


Security code
Refresh

Login Form