Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Nasiri | ناصری

( 1 Vote )

Saleqah parwi ka Nasiri mujh ko sikhata hi

Who apnay nam ki khatir ajal ki rah le jata hi

 

Who darorsn ki zenat nahi bhoola kabhi hum ko

Faseel-e-zulmat e shab ko Masiha khud girata hi

 

Manazil qurb-e-yazdaan ki nazar mein har gharhi gar hon

Dam-e-tazah who rita hai emaan ki meh pilata hi

 

Hayat-e-no ki khatir be samar nah roz-o-shab hon ge

Agar insan ko rah-e-zeest par woh man khilata hi

 

Emaan ke raston peh humsafar woh zaat-e-aqdas hai

Mazaham phatharon ko rah se mere hatata hi

 

Kahan mujh ko yeh hikmat hi samajh paon sukhan Tera

Tu mujh peh bhaid apnay pur fazal asaan kerta hai

 

Masih-e-Pak ki khatir milein ruswaian mujh ko

Mera aizaz hi Amer mujhe yakta banata hai

 

Esaar Almasih lafzon mein kaisay ho bayan Amer

Saja ke khaar sar peh mere angan gul khilata hi

سلیقہ پیروی کا ناصریؔ مُجھ کو سکھاتا ہے

وہ اپنے نام کی خاطر اجل کی راہ لے جاتا ہے

 

وہ دارورسن کی زینت نہیں بھولا کبھی ہم کو

فصیلِ ظُلمتِ شب کو مسیحا خود گراتا ہے

 

منازل قُربِ یزداں کی نظر میں ہر گھڑی گر ہوں

دمِ تازہ وہ دیتا ہے ایماں کی مہ پلاتا ہے

 

حیاتِ نو کی خاطر بے ثمر نہ روز و شب ہوں گے

اگر انساں کو راہِ زیست پر وہ من کھلاتا ہے

 

ایماں کے راستوں پہ ہمسفر وہ ذاتِ اقدس ہے

مزاحم پتھروں کو راہ سے میرے ہٹاتا ہے

 

کہاں مُجھ میں یہ حکمت ہے سمجھ پاوٴں سُخن تیرا

تُو مُجھ پہ بھید اپنے پُر فضل آسان کرتا ہے

 

مسیحِ پاک کی خاطر ملیں رُسوائیاں مُجھ کو

میرا اعزاز ہے عامرؔ مُجھے یکتا بناتا ہے

 

ایثار المسیح لفظوں میں کیسے ہو بیاں عامرؔ

سجا کے خار سر پہ میرے آنگن گُل کھِلاتا ہے

© 2012 Amer Zareen

Add comment


Security code
Refresh

Login Form