Masihi Shayari - PROMOTING MASIHI SHAYARI
Download Urdu Font

Masiha Ke Janam Peh | مسیھا کے جنم پہ

( 2 Votes )

Naghma sira fiza hai Masiha ke janam peh
Pur noor yeh jahan hai Masiha ke janam peh

 

Ze Roh ker rahay hain sana mil ke ek sath
Dekhi hai din ke jesay munawar yeh ek raat
Zulmat rahi kahan hai Masiha ke janam peh

 

Insaniyat ke zakham gunah mundmal hain aj
Sab anbiya ke harf-e-zuban kamil huay hain aj
Dar makhlasi ka khula hai Masiha ke janam peh

 

 

Raqsan hain do jahan yeh sitayash bhi ker rahay
Ous shah-e-qainat ka hai dam yeh bhar rahya
Jazbaat bay bayaan hain Masiha ke janam peh

 

Daf, bansali, sitar aur barbat hain shadman
Khushiyon ka umad aya falak se hai karwan
Joban peh wasal-e-shafi hai Masiha ke janam peh

نغمہ سرا فضا ہے مسیحا کے جنم پہ
پُر نور یہ جہاں ہے مسیحا کے جنم پہ

....٭....

ذی رُوح کررہے ہیں ثنا مِل کے ایک ساتھ
دیکھی ہے دن کے جیسے منور یہ ایک رات
ظُلمت رہی کہاں ہے مسیحا کے جنم پہ

....٭....

´انسانیت کے زخمِ گناہ مُندمل ہیں آج
سب انبیاءکے حرفِ زباں کامِل ہوئے ہیں آج
در مخلصی کا کھُلا ہے مسیحا کے جنم پہ

....٭....

رقصاں ہیں دو جہاں یہ ستائش بھی کررہے
اُس شاہِ کائنات کا ہے دم یہ بھر رہے
جذبات بے بیاں ہیں مسیحا کے جنم پہ

....٭....

دف ،بانسلی، ستار اور بربط ہیں شادماں
خوشیوں کا اُمڈ آیا فلک سے ہے کارواں
جوبن پہ وصلِ شافی ہے مسیحا کے جنم پہ

© 2010 Amer Zareen

Add comment


Security code
Refresh

Login Form